Kashti bhi nahi badli Daryaa bhi nahi badla

  • By:

Kashti bhi nahi badli Daryaa bhi nahi badla

Aur Doobnay walon ka Jazba Bhi Nahi Badla

Hay Shoq e Safar ek Arsay Se Yaaro

Munzil Bhi Nahi Pai, Rastaa Bhi Nahi Badla

کشتی بھی نہیں بدلی دریا بھی نہیں بدلہ

اور ڈوبنے والوں کا جذبہ بھی نہیں بدلہ

ہے شوق سفر ایسا اک عرصہ سے یارو

منزل بھی نہیں پائی رستہ بھی نہیں بدلہ


SOURCE :

Book :

Edition :

Publication :

Advertizement


Coments